پاکستان میں صدارتی الیکشن کا طریقہ اور حکومت واپوزیشن کی قومی اسمبلی، صوابائی اسلمبلیوں اور سینٹ میں پارٹی پوزیشن 310

صدارتی الیکشن کا طریقہ اور حکومت واپوزیشن کی پوزیشن

پاکستان میں صدارتی الیکشن کا طریقہ اور حکومت واپوزیشن کی قومی اسمبلی، صوابائی اسلمبلیوں اور سینٹ میں پارٹی پوزیشن

سینیٹ میں پی ٹی آئی اور اتحادی حکومت کی 27 نشستیں ہیں جبکہ متحدہ اپوزیشن کے 75 نشستیں ہے
قومی اسمبلی میں متحدہ حکومت کی 176 نشستیں ہیں جبکہ متحدہ اپوزیشن کے 154 نشستیں ہیں
خیبر پختونخوا میں حکومت کے پاس 80 جبکہ اپوزیشن کے پاس 34 نشستیں ہیں
پنجاب میں حکومت کے پاس 185 جبکہ اپوزیشن کے پاس 173 نشستیں ہیں
سندھ میں حکومت کے پاس 98 جبکہ اپوزیشن کے پاس 68 نشستیں ہیں
بلوچستان میں حکومت کے پاس 39 جبکہ اپوزیشن کے پاس 22 نشستیں ہیں

صدارتی الیکشن ووٹ فارمولہ

سینیٹ کل نشستیں 104 خالی نشستیں 2 =102 جبکہ صدارتی انتخاب میں سینیٹ کے کل ووٹ 104 ہیں اور ہر رکن سینیٹ کا ووٹ 1 ووٹ تصور ہوگا

قومی اسمبلی کل نشستیں 342 خالی نشستیں 12 =330 جبکہ صدارتی انتخاب میں قومی اسمبلی کے کل ووٹ 342 ہیں اور ہر رکن قومی اسمبلی کا ووٹ 1 ووٹ تصور ہوگا

خیبر پختونخوا اسمبلی کل نشستیں 124 خالی 10 =114 جبکہ صدارتی انتخاب میں خیبر پختونخوا اسمبلی کے کل ووٹ 65 ہے اب 114 کو 65 پہ تقسیم کرے= 1.75 کی اوسط سے ایک ووٹ کاسٹ ہوگا

پنجاب اسمبلی کل نشستیں 371 خالی نشستیں 13 =358 جبکہ صدارتی انتخاب میں پنجاب اسمبلی کے کل ووٹ 65 ہے اب 358 کو 65 پہ تقسیم کرے=5.50 کی اوسط سے ایک ووٹ کاسٹ ہوگا

سندھ اسمبلی کل نشستیں 168 خالی نشستیں 2 =166 جبکہ صدارتی انتخاب میں سندھ اسمبلی کے کل ووٹ 65 ہے اب 166 کو 65 پہ تقسیم کرے=2.55 کی اوسط سے ایک ووٹ کاسٹ ہوگا

بلوچستان اسمبلی کل نشستیں 65 خالی نشستیں 4 =61 جبکہ صدارتی انتخاب میں بلوچستان اسمبلی کے کل ووٹ 65 ہے اور یہاں صرف 61 ووٹ استعمال ہونگے

متحدہ حکومت:سینیٹ 27+ قومی اسمبلی 176+ پختونخوا 46+ پنجاب 34+ سندھ 27+ بلوچستان 39 =349

متحدہ اپوزیشن:سینیٹ 75+ قومی اسمبلی 154+ پختونخوا 19+ پنجاب 31+ سندھ 38+ بلوچستان 22 =339

مگر اس سارے کھیل کا مرکز بلوچستان ہوگا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں