31

کراچی میں 9 دھائیوں کے بعد ریکارڈ توڑ طوفانی بارش سے متعدد قیمتی جانیں ضائع ہو گئیں۔

کراچی میں مون سون بارشوں کے باعث جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 47 ہو گئی جبکہ پورے صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 80 ہو گئی، منگل کو کراچی کے متعدد مقامات پر بارش ہونے کے بعد سے اب تک شہر کی خستہ حالی ختم نہیں ہوئی تھی کہ جمعرات کو ہونے والی بارش نے شہر کا حلیہ مزید بگاڑ دیا، جمعرات کے دن ہونے والی موسلا دھار بارش سے ایک ہی دن میں 17 افراد جاں بحق ہوئے۔

کراچی میں ڈرگ روڈ اَنڈر پاس میں جمعرات کو ہونے والی بارش کے باعث جمع شدہ پانی میں ایک شخص ڈوب کر بے ہوش ہو گیا جبکہ اورنگی اور ہاکس بے میں دو افراد ڈوب کر جاں بحق ہوگئے، لیاقت آباد میں سڑک پر موجود گڑھے سے ایک شخص کی ڈوبی ہوئی لاش نکالی گئی جبکہ تیموریہ میں بھی نالے سے ایک شخص کی ڈوبی ہوئی لاش نکالی گئی، گلستان جوہر میں گھر کی بیرونی دیوار آسمانی بجلی گرنے کے باعث گرگئی جس سے 6 افراد جاں بحق ہوئے جن میں 4 خواتین اور 2 بچے تھے۔

مختلف علاقوں میں ڈوبنے والے گیارہ افراد کی لاشیں نکال لی گئیں، کلفٹن دو تلوار اَنڈر بائی پاس میں چودہ سالہ لڑکا ڈوب کر جاں بحق ہو گیا جبکہ پنجاب چورنگی اَنڈر بائی پاس میں ایدھی کے رضا کاروں نے 38 سالہ شخص کی لاش نکال لی، نارتھ ناظم آباد میں بھی ایک لاش پانی سے نکالی گئی ہے۔

جمعرات کے دن کراچی کے تیز بارش میں سڑکیں خراب ہو گئیں، بارش کے بعد بھی مختلف مقامات پر وافر مقدار میں پانی جمع ہے، سول انتظامیہ اور فوج پانی کو نکالنے اور لوگوں کی مدد کرنے میں مصروف ہیں جبکہ شاہین کمپلیکس کے نالے پر قائم کار پارکنگ دھنس گئی جس کی وجہ سے پارکنگ پر موجود گاڑیاں نالے میں گر گئیں، لوگوں کی بہت سی قیمتی گاڑیاں مختلف مقامات پر بارش کی نذر ہو گئیں۔

محکمہ موسمیات کے ترجمان کے مطابق ہفتہ، اتوار اور پیر کو بھی کراچی میں اور صوبہ سندھ و بلوچستان کے مختلف علاقوں میں معتدل اور تیز بارشوں کا امکان ہے، محکمہ موسمیات کے چیف میٹرولوجیسٹ کے مطابق اس ماہ شہر کراچی میں 484 ملی لیٹر بارش ریکارڈ کی جا چکی ہے جس میں سے ایک سو تیس ملی لیٹر بارش صرف جمعرات کو ہوئی ہے ان کا کہنا تھا کہ ہماری ڈیٹا کے مطابق اتنی بارش 90 سال قبل 1931 میں کراچی میں ریکارڈ کی جا چکی ہے۔

وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے کراچی میں نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بارش نے یہ نہیں دیکھا کہ یہ امیر آدمی ہے یا غریب آدمی ہے انہوں نے کہا کہ بارش سے متاثرہ خاندانوں کی ہر ممکن مدد کریں گے، وزیر اعلی کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان نے کل رات کو مجھ سے بات کی تھی وزیر اعظم نے ہر ممکن مدد کی پیشکش کی ہے اس لیے ہم ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں، وزیر اعلی سندھ کا کہنا تھا کہ کراچی کو بہتر بنانے کے لیے دس ارب ڈالرز کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں